Breaking NewsNationalتازہ ترین

عجب کرپشن کی غضب کہانی:زکریا یونیورسٹی کے اساتذہ،ٹیچنگ سے رئیل سٹیٹ کے انوسٹرز تک

(ڈی رپورٹرز ایکسکلوزیو)
زکریا یونیورسٹی کے اساتذہ کی کتنی جہتیں ہیں کوئی نہیں جانتا، ایک سیاستدان، ایڈمسنٹریٹر، جائیداد کے کاروربار، یا تعمیراتی پراجیکٹ کے معمار بس ایک پہچان نہیں ہے وہ ہے ٹیچر ۔
حال ہی میں جو نیا کردار سامنا آیا وہ رئیل سٹیٹ کے کارروبار میں انوسٹمنٹ کا ہے، یہ پیسہ کہاں سے آیا یہ الگ سوال ہے، کیونکہ ایک سرکاری ملازمین کے پاس اس کا سورس آف انکم کیا ہے اس کی تحقیق ہونا ضروری ہے۔
اس وقت یونیورسٹی کے سو سے زائد پروفیسر اس لئے پریشان ہیں ان کی واپڈا ٹاون فیز تھری میں کی گئی انوسٹمنٹ ڈوب رہی ہے اس کو کیسے بچایا جائے؟؟
ٹیچنگ کا پلیٹ فارم استعمال کرتے ہیں تو انٹی کرپشن پیچھے پڑ سکتا ہے کہ سورس آف انکم بتانا پڑے گا، اس لئے گم نام رہ کر ایک مہم چلائی جارہی ہے اس بے خبری میں وہ رئیل سٹیٹ مافیا کے ہاتھوں میں کھیلنے لگے ہیں۔
ذرائع کا دعویٰ ہے کہ بہاوءالدین زکریا یونیورسٹی کے پروفیسرز نے واپڈا ٹاؤن گروپ بنا کر ایک مافیا کے ھاتھوں بلیک میل ھوگئے۔ واپڈا ٹاون کے افسران کو بلیک میل کرنے کے لیے احتجاج کا سلسلہ شروع کر دیا۔

پروفیسرز گروپ کے پیچھے ایک مافیا کا ھاتھ ہےجو واپڈا ٹاون سے اپنے ذاتی مفادات حاصل کرنا چاھتا ہے جس کی وجہ سے احتجاج اور خبروں کے سلسلہ کے لیے مافیا گروپ نے بھاری پیسے لگانے کا عندیہ دے دیا ہے۔
واپڈا ٹاون کے کنوینئر سلیم قریشی کے خلاف اور ان کو بلیک میل کرنے کے لیے مافیا گروپ نے اپنے ذاتی مفادات کے حصول کے لیے پروفیسرز گروپ کو اگے کر دیا ، واپڈا ٹاون کے رہائشیوں نے کا کہنا ہے کہ ھم ایسے مافیا گروپ کو واپڈا ٹاون میں ان نہیں ھونے دیں گے، اور نہ ہی کسی قسم کی مداخلت کرنے دیں گے۔
زکریا یونیورسٹی کے پروفیسرز اپنے پلاٹوں کے لیے ان کا احتجاج کا حق ھے۔ لیکن مافیا کے ھاتھوں کھلونا بننے نہیں دیں گے ۔
عید کے بعد واپڈا ٹاؤن فیز تھری کے الاٹیز کے حقوق کے لیے میدان میں آ رہے ھیں۔
ڈی رپورٹرز انتظامیہ اس موقع پر اپنے قارئین کو یقین دلاتی ہے کہ ھم ان پروفیسرز گروپ اور ان کی بیک پر سپورٹ کرنے والے مافیا گروپ کی نشان دہی کریں گے، اور ھم اس مافیا گروپ کی بھی نشاندھی کریں گے۔جو واپڈا ٹاون فیز تھری کے پلاٹوں سے 10, 10 فٹ مٹی اٹھا کر کسی بڑی ہاؤسنگ سوسائٹی کو فروخت کر رھے ھیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں