Breaking NewsEducationتازہ ترین

ویمن یونیورسٹی ملتان:شہدائے پشاور کی یاد میں تقریب کا انعقاد

ویمن یونیورسٹی میں سانحہ اے پی ایس کے شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے ڈائریکٹر سٹوڈنٹس افیرء کے زیر اہتمام تقریب منعقد کی گئی , جس میں تمام شعبوں کی چیئرپرسن اور طالبات نے شرکت کی۔
اس موقع پر وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر عظمیٰ قریشی نے کہا ہے کہ اے پی ایس پشاور کے واقعہ کو سات سال گزر گئے, مگریہ زخم آج بھی ساری قوم کے دلوں میں ہرا اور گہرا ہے جس کو کوئی بھی نہیں بھولا۔
اے پی ایس کے واقعہ نے پوری قوم کو یکجا کر دیا اس واقعہ کا زخم بہت گہرا تھا، لیکن پاکستانی قوم اور اداروں کا عزم اس سے کہیں بلند ہے پوری قوم نے پاکستان کے سیکورٹی اداروں کے ساتھ مل کر ایک ایسے آپریشن کا آغاز کیا کہ جس کا ہدف ایک ایسا پاکستان تھا جہاں ریاست ہی کو طاقت کے استعمال کا حق حاصل ہو۔
درندہ صفت دہشتگردوں کے حملے میں 147 افراد شہید ہوئے جن میں 122 طلباء ، 22 اسکول اسٹاف ممبر اور تین سکیورٹی اہلکار شامل تھے۔
جن کا خون رنگ لایا آج وطن عزیزمیں امن وامان ہے، مگرہمیں اس دہشت گرد سوچ کا مکمل خاتمہ کرنا ہے اور قوم کے بچوں میں یہ شعور اجاگر کرنا ہے کہ اس وطن کے مستحکم کرنے میں ہمارا کتناخون بہا ہے، یہ دن تجدید عہد کادن ہے کہ علم حاصل کئے بغیر اس ملک کی ترقی ممکن نہیں ہے ، علم حاصل کرتے ہوئےاپنی جان کا نذرانہ دینے والے طلبا اور اساتذہ کا بھی یہی پیغام تھا کہ اس وطن کا جھنڈا بلند رکھنےکےلئے ہمیں ہرمحاذ پر تیاری کرنی ہے علم کی بدولت دنیا پرراج کرنا ہے۔
ڈاکٹر عدیلہ سعید نے کہا 16 دسمبر تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے یہ غور و فکر اور خود شناسی کا دن بھی ہے جب ہم کھوئی ہوئی جانوں کو یاد کرتے ہیں اور ان کو عقیدت کے نذرانے پیش کرتے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں