Breaking NewsNationalتازہ ترین

مہنگائی کے مارے عوام پر بجلی گرا دی گئی، پیٹرول کی قیمت بڑھانے کی سمری مسترد

مہنگائی کے مارے عوام پر بجلی گرا دی گئی، نیپرا نے بجلی کی قیمتوں میں 4 روپے 85 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی ہے۔

مہنگائی کے ستائے عوام جو نئی حکومت کے آنے کے بعد کچھ ریلیف کی توقع کررہے تھے ان پر بجلی گرادی گئی ہے ، اور نیپرا نے بجلی کی قیمتوں میں 4 روپے 85 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی ہے ،جس کا نوٹیکفیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

نیپرا کی جانب سے جاری کردہ اعلایے کے مطابق یہ اضافہ فروری کے ماہانہ فیول چارجز ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا گیا ہے ، جس کا اطلاق صرف ماہ اپریل کے بلوں پر ہوگا۔

اعلامیے میں مزید بتایا گیا ہے کہ اس اضافے ا اطلاق 200 یونٹ تک بجلی استعمال کرنے والے لائف لائن صارفین اور کے الیکٹرک کے صارفین پر نہیں کیا جائیگا۔

اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ سی پی پی اے جی نے 4 روپے 94پیسے فی یونٹ اضافے کی درخواست کی تھی، اتھارٹی نے گزشتہ ماہ 31 مارچ کو ایف سی اے پرعوامی سماعت کی تھی، جب کہ جنوری کاایف سی اے5 روپے 94 پیسےچارج کیا گیا تھا جو ایک مہینےکے لیےتھا۔

دوسری طرف وزیراعظم شہباز شریف نے پٹرولیم مصنوعات قیمتیں نہ بڑھانے کا حکم دے دیا، گزشتہ روز اوگرا نے پیٹرول کی قیمت 83 روپے 50 پیسے اور ڈیزل 119 روپے بڑھانے کی تجویز دی تھی۔

وزیراعظم ذرائع کا کہنا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں موجودہ سطح پر برقرار رکھی جائیں۔

واضح رہے کہ موجودہ ٹیکس شرح پرپیٹرول فی لیٹر21.53 روپے مہنگا کرنے کی تجویزموجودہ ٹیکس شرح پرڈیزل فی لیٹر 51 روپے 30 پیسےمہنگا کرنے کی سمری بھیجی گئی تھی۔

ذرائع کا بتانا تھا کہ فل ٹیکس اورلیوی پرمٹی کا تیل 77.56 روپے مہنگا کرنے کی تجویز دی گئی تھی جبکہ فل ٹیکس اور لیوی پر لائٹ ڈیزل 77 روپے 13 پیسے مہنگا ہونے کا امکان تھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں