Breaking NewsNationalتازہ ترین

قرض دینے سے قبل آئی ایم ایف کا پاکستان سے نیا مطالبہ

آئی ایم ایف نے پاکستان سے طے شدہ امور پر پیش رفت کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا نادار طبقے کو ریلیف پرکوئی اعتراض نہیں۔ آئی ایم ایف نے پاکستان کو طے شدہ امور پر پیشرفت کی ہدایت کردی ۔

آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ ایگزیکٹو بورڈ اجلاس سے قبل تمام ترجیحی نکات پرعمل کیا جائے۔

آئی ایم ایف ذرائع کا کہنا ہے کہ اصلاحاتی ایجنڈے کے عدم نفاذ سے بورڈ اجلاس میں تاخیر ہوسکتی ہے، آئی ایم ایف اور پاکستان کےدرمیان اسٹاف لیول معاہدہ میں کوئی ملک اثرانداز نہیں ہوا۔

ذرائع نے کہا کہ نادار طبقے کو ریلیف پرکوئی اعتراض نہیں، لیکن پاکستان میں توانائی کی قیمتوں کے حوالے سے واضح پالیسی چاہتے ہیں ،کیونکہ گزشتہ حکومت نے آئی ایم ایف سے طے کئے گئے معاہدے پر عمل نہیں کیا۔

آئی ایم ایف کا کہنا تھا کہ نگران حکومت آئی تو اس سے بات چیت پر کوئی قدغن نہیں ہے، پاکستانی قوانین میں نگران حکومت آئی ایم ایف معاہدہ پردستخط نہیں کرسکتی۔

خیال رہے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) اور پاکستان کے درمیان معاہدہ طے پا گیا ہے ، جس کے تحت آئی ایم ایف نے پاکستان کو ایک ارب 17 کروڑ ڈالر فراہم کرنے پر رضامندی ظاہر کی۔

آئی ایم ایف اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ ائی ایف ایف کے تحت 7ویں، 8ویں مشترکہ ریویو کے معاملات طے پا گئے، توسیعی پروگرام کے تحت 4ارب 20کروڑ ڈالر مزید فراہم کیے جائیں گے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں