Breaking NewsEducationتازہ ترین

نفسیات، تعلیم، اور دماغی صحت پر پہلی بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد

ویمن یونیورسٹی کے شعبہ سائیکالوجی کے زیراہتمام تین روزہ کانفرنس شروع ہوگئی ،جس کا عنوان تعلیم اور کلینیکل سوشل سائیکالوجی ‘‘ ہے ۔

افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر سعدیہ مشرف,( چیئرپرسن شعبہ سائیکالوجی) نے کانفرنس میں معاشرتی فلاح و بہبود اور ذہنی صحت کی بحالی کیلئے علومِ نفسیات کے اطلاق، کمسنوں اور بالغوں کو درپیش خطرات،مثبت سماجی تعلقات اور ذہنی صحت، شخصی و انفرادی فرق، کام سے متعلق رویہ اور ملازمین کی کارکردگی ،خاندانی تحرک اور نوجوانی کے مسائل،والدین کی نفسیات،تعلیم اور کھیلوں سے متعلق نفسیاتی نقطہ نظر،صنفی امتیاز اور بین الاثقافتی نفسیات ، نفسیاتی بحالی پرمثبت نقطہ نظر اورانسانی تحفظ و علاج میں کلینیکل سائیکالوجی کے کردار پر روشنی ڈالی جائے گی ، جس کے دور رس نتائج سامنے آئیں گے ۔

وائس چانسلر ڈاکٹر عظمیٰ قریشی نے کہا کہ نفسیات، تعلیم، اور دماغی صحت پر پہلی بین الاقوامی کانفرنس نے سائنسدان کے جذبے کو ابھارنے کے لیے اپنے عزم کو ثابت کیا ہے جو اس صنعتی ترقی کے دور میں پیش آنے والے نفسیاتی شعبے کے مسائل کو حل کرنے کے لیے بصیرت، اختراع اور تخلیقی صلاحیتیں فراہم کرتا ہے۔

سینکڑوں سائنسدانوں، پیشہ ور افراد، اور طلباء آج موجودہ مسائل کے بارے میں بحث کرنے، تجزیہ کرنے اور اپنی رائے کا اظہار کرنے کے لیے جمع ہوئے ہیں، معاشرے میں معتدل رجحانات پروان چڑھانے کی ضرورت ہے، نوجوان نسل کو سماجی دباؤ اور چیلنجز کا سامنا ہے، جس کی وجہ سے ان کی صلاحیتیں انفرادی و اجتماعی زندگی کے لیے فائدہ مند ثابت نہیں ہوتیں۔

نوجوان خواتین معاشرے کا سرمایہ ہیں، ہم اس سرمائے کو اپنے درمیان پا کر اور اس کی رہنمائی کرنے میں فخر محسوس کرتے ہیں.

کانفرنس کی مہمان خصوصی ڈاکٹر فوزیہ ناز( پرنسپل اسلامیہ کالج لاہور) اور ڈاکٹر انیق احمد تھے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے نفسیاتی مسائل، جسمانی اور ذہنی صحت سے متعلق رویے کی خرابیوں کا جائزہ لینے، تشخیص اور علاج کرنے کے لیے طبی ماہر نفسیات کے کردار پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ نفسیات حیاتیاتی طرز عمل اور سماجی عوامل کو سمجھنے کی کوشش کرتی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے کہ ہم لوگوں میں ذہنی صحت اور سماجی فلاح و بہبود کے بارے میں شعور اجاگر کریں۔

اس کانفرنس کی فوکل پرسن ڈاکٹر سعدیہ مشرف اور ڈاکٹر اسماء بشیر ہیں۔

یہ تین دن جاری رہنے والی کانفرنس میں روزانہ تین سیشن ہوں گے ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں