Breaking NewsEducationتازہ ترین

پاکستان میں کھجور کی کاشت اور پیداوار کے فروغ کے لیے انٹرنیشنل سمینار کا انعقاد

ملتان ایم این ایس زرعی یونیورسٹی میں ڈیپارٹمنٹ آف آئی پی بی کے زیر اہتمام پاکستان میں کھجور کی کاشت اور پیداوار کے فروغ کے لیے انٹرنیشنل سمینار کا انعقاد کیا گیا۔

سمینار کے انٹرنیشنل سپیکر پروفیسر ڈاکٹر راشد الحیائ(سلطان قابوس یونیورسٹی) اور پروفیسر ڈاکٹر سرور مرضد تھے ۔انٹرنیشنل سیمینار کی صدارت کرتے ہوئے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر آصف علی (تمغہ امتیاز) نے مہمانوں کو خوش آمدید کہا اور کھجور کی اہمیت پر مختصر بات کی ۔

فیصل راشد الحیائ عمان سے بات کرتے ہوئے کھجور کی پیداوار اور کاشت کے حوالے سے عمان میں موجودہ صورتحال سے آگاہ کیا ۔

انہوں نے بتایا کہ ایگراکالوجی جدید ایگریکلچر کے فروغ کے لیے بہت ضروری ہے ۔لہذا جدید طریقوں کے ذریعے ہم اچھی پیداوار لیتے ہوئے کھجور کی پیداوار بڑھا سکتے ہیں ۔

دنیا میں کھجور کی پیداوار کے لحاظ سے عمان پہلے اور پاکستان تیسرے نمبر پر ہے ۔

مزید عمان میں کھجور کی پیداوار اور کوالٹی کی وجوہات پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایا کہ عمان میں کھجور کی کاشت 75 فیصد رقبہ پر ہوتی ہے ، اور اس بات کا اعادہ کیا کہ دونوں ملکوں کے سائنسدان مل کر اپنی تحقیقی صلاحیتوں کے ذریعے کھجور کی کاشت پیداوار اور کوالٹی کو بڑھائیں گے ۔

پروفیسر ڈاکٹر سرور مرضد نے دنیا میں کھجور کی پیداوار کے بارے میں بتایا کہ پاکستان کھجور کی ایکسپورٹ کے لحاظ سے آٹھویں نمبر پر ہے ۔

لیکن اپنی اچھی پیکنگ نہ ہونے کی وجہ سے جو پیسہ کمایا جاتا ہے وہ بہت کم ہے ۔

اس موقع پر پروفیسر ڈاکٹر حماد ندیم طاہر، ڈاکٹر ذوالقرنین، ڈاکٹر محمد شعیب،پلوشہ خانم سمیت دیگر فیکلٹی اور طلباء و طالبات کی کثیر تعداد نے موجود تھی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں