Breaking NewsEducationتازہ ترین

ویمن یونیورسٹی میں کچن گارڈننگ بارے تربیتی ورکشاپ

ویمن یونیورسٹی ملتان کے ویمن ڈیویلپمنٹ سنٹر متی تل کیمپس کے زیر اہتمام سیمینار اور تربیتی سیشن کا انعقاد کیاگیا، جس کا موضوع خواتین کو کچن گارڈنگ کے ذریعے بااختیار بنانا تھا ۔

سیمینار سمارٹ کلاس روم میں منعقد ہوا ، جس میں نواز شریف زرعی یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر نیبل احمد نے خطاب کرتے ہوئے کہ گھریلو ضروریات کو پورا کرنے کے لیٔے گھر میں یا گھر کے آس پاس سبزیاں اگانا کچن گارڈننگ کہلاتا ہے۔

آبادی میں اضافے کی وجہ سے سبزیات کی دیمانڈ میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ جس کی وجہ سے کسانوں نے پیداوار بڑھانے کے لئے نئے طریقہ کار اپنا لیٔے ہیں۔

جن میں کیمیاییٔ کھادوں اور کیڑے مار زہریلی ادوایات کا بکثرت استعمال بھی شامل ہے۔ اس کی وجہ سے اگرچہ سبزیات کی پیداوار میں اضافہ ہوا ہے مگر سبزیات کی کوالٹی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔

اس کے علاوہ شہری آبادی کے نزدیک اگائی جانے والی سبزیات میں آبپاشی کے لیٔے سیویریج کے پانی کا استعمال بھی انسانی صحت کے لیٔے انتہائی مضر ہے۔

ان تمام عوامل کو مد نظر رکھتے ہوئے، کچن گارڈننگ متعارف کروائی گئی ہے تاکہ گھریلو پیمانے پر تازہ اور کیمیائی آلودگی سے پاک سبزیوں کی فراہمی کو ممکن بنایا جا سکے۔

گھریلوخواتین اس سے فائد اٹھاتے ہوئے اضافی سبزیاں فروخت بھی کرسکتی ہیں اس سے انہیں اضافی آمدنی مل سکتی ہے۔

بعد ازں انہوں نے تربیتی سیشن میں محدود پیمانے پر گھروں میں سبزیاں کاشت اور آسانی سے اپنی گھریلو ضروریات کو پوری کرنے کے ساتھ ساتھ آرگینک خوراک حاصل کر کے بیماریوں سے بچاو کے حوالہ سے تربیت دی گئی۔

تربیتی سیشن میں شریک خواتین کوگھریلو سبزیوں کی کاشت، پلاٹ کی تیاریوں، سبزیات کی بیماریاں،انکے سدباب اور سبزیوں کو محفوظ بنانے کے حوالہ سے آگاہی دی گئی۔

اس موقع پر ڈائریکٹر ویمن ڈویلمنٹ سنٹر ڈاکٹر شازیہ پروین اساتذہ اور طالبات بھی موجود تھیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں