Breaking NewsNationalتازہ ترین

میپکو : ہائیڈرو یونین نے احتجاج کی کال دے دی

ریجنل چیئرمین میپکو چوہدری غلام رسول گجر نے ریجنل عہدیداران کے ہمراہ بختیار لیبر ہال شاہ رکن عالم کالونی ہنگامی اجلاس طلب کیا۔

جس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسٹینڈنگ کمیٹی سینیٹ آف پاکستان نے واپڈا محکمہ بجلی کے ایک لاکھ پچاس ہزار سے زائد ملازمین کے لیے بجلی کی قلیل سہولت بند کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے انہیں نقد رقم تنخواہ میں دینے کی سفارش کی ہے۔

میپکو ریجن وزیراعظم پاکستان اور وفاقی وزیر توانائی حکومت پاکستان سے پرزور مطالبہ کرتا ہے کہ وہ میپکو کے ملازمین کو ان کے جائز حق سے محروم کرنا لیبر کے قوانین کی نہ صرف خلاف ورزی ہے، بلکہ محنت کشوں کو سالہا سال سے دیرینہ حاصل کیے ہوئے حقوق کو سبوتاژ کیا جارہا ہے۔

ہمارے محنت کش ملازمین ہر سال درجنوں کی تعداد میں عوام کو بجلی کی بنیادی سہولتیں سر انجام دہی میں کرنٹ لگنے سے اپنی جانیں قربان کر دیتے ہیں۔

اس مہنگائی کے دور میں ان کو ایسی معمولی سہولت سے محروم کرنا سراسر ناانصافی ہے۔

ہم حکومت کو یاد کرواتے ہیں کہ تمام صنعتی ادارے ریلوے، پی آئی اے، سوئی گیس اور نجی ادارے بھی اپنے اپنے محکموں میں ملازمین کو سہولتیں فراہم کرتے ہیں۔

سینیٹ کمیٹی کے ارکان قومی اسمبلی خزانہ سے بھاری تنخواہیں رہائش بجلی ٹیلی فون اور گیس علاج معالجہ کی سہولتیں اور سفر کی بھاری مراعات حاصل کرتے ہیں۔

ملازمین کو اپنے قانونی حق سے محروم کرنے سے ملازمین میں شدید بے چینی پیدا ہوگی۔

اسی تناظر میں وزیراعظم پاکستان سے ہمدردانہ التماس ہے کہ وہ ذاتی طور پر فوری مداخلت کر کے اس غیر قانونی فیصلہ کو واپس کروائی۔ورنہ میپکو کے ملازمین پاکستان بھر کے محنت کشوں کی طرح احتجاج کرنے پر مجبور ہو جائیں گے۔

میٹنگ میں چودھری محمود امجد،شکیل بلوچ،سجاد بلوچ،رانا محمد انور،چوہدری محمد خالد،چوہدری شبیر گجر،الطاف مہار،رانا زاہد جاوید،عاطف زیدی،سلمان۔بلوچ،راشد یامین،چوہدری اظہر آرائیں،رانا محمد عمران، مظہر عباس،ذیشان پیرزادہ،عبدالواحد ہاشمی،عثمان راں،رانا نواز،شوکت بلوچ،شاہد ملک، رانا سلیم تاج، عارف زکی،راؤ ماجد،شباب خان،عدیل امیر موجود تھے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں