Breaking NewsNationalتازہ ترین

پٹرول 46 اور ڈیزل 84 روپے فی لیٹر مہنگا کرنے کی تیاری

پٹرول کی قیمت میں 46 اور ڈیزل کی قیمت میں 84 روپے فی لیٹر تک اضافہ ہوسکتا ہے، اوگرا نے قیمتوں میں اضافے کی سمری حکومت کو ارسال کردی پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں بالترتیب 46 اور 84 روپے اضافہ ہوسکتا ہے۔

اس حوالے سے اوگرا نے قیمتوں میں اضافے کی سمری حکومت کو ارسال کردی ہے۔

سمری میں حکومت سے سبسڈی کو مرحلہ وار ختم کرکے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں مرحلہ وار بڑھانے کی تجویز دی گئی ہے۔

ساری سبسڈی ختم کریں تو فی لیٹرپٹرول 45 روپے 15 پیسے بڑھانا پڑےگا اور پوری سبسڈی ختم کرنےسےپٹرول195روپے کا ہو جائے گا۔

اس طرح مکمل سبسڈی ختم کرنے سے ڈیزل 230 روپےفی لیٹر ، مٹی کےتیل 176روپے اور لائٹ ڈیزل فی لیٹر 186 روپے 31 پیسے تک پہنچ جائے گا۔

اوگرا کی جانب سے ارسال کردہ سمری میں حکومت کو پٹرولیم مصنوعات پربڑھتی ہوئی سبسڈی سےآگاہ کر دیا، فی لیٹر پٹرول پر حکومت 29 روپے 60 پیسے سبسڈی دیتی ہے اور 16مئی سے فی لیٹر پٹرول کی یہ رقم 45 روپے 14 پیسے تک پہنچ جائے گی۔

ڈیزل پر فی لیٹرسبسڈی اس وقت 73روپے4پیسے ہے، 16 مئی سےڈیزل پرسبسڈی 85 روپے 85 پیسے تک پہنچ جائے گی، اسی طرح مٹی کے تیل پر فی لیٹر سبسڈی 43 روپے 16 پیسے ہے، 16 مئی سے مٹی کے تیل پر فی لیٹر سبسڈی 50.44 روپے ہو جائے گی۔

لائٹ ڈیزل آئل پراس وقت فی لیٹرسبسڈی64.70 روپے ہے، 16مئی سےلائٹ ڈیزل پریہ سبسڈی 68 روپے فی لیٹر ہو جائے گی۔

روپے کی بے قدری بھی پٹرولیم مصنوعات قیمتوں میں اضافے کا باعث ہے، پٹرولیم مصنوعات قیمتوں کا حتمی فیصلہ وزارت وزیر اعظم کی مشاورت سے کریگی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں