Breaking NewsEducationتازہ ترین

زرعی یونیورسٹی میں روڈ سیفٹی سیمینار کا انعقاد

ملتان ایم این ایس زرعی یونیورسٹی میں شعبہ ٹرانسپورٹ کے زیر اہتمام روڈ سیفٹی سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔

جس کی صدارت رئیس جامعہ پروفیسر ڈاکٹر آصف علی(تمغہ امتیاز) نے کی۔

سیمینار کے مہمان خصوصی ڈی آئی جی موٹروے چوھدری محمد سلیم تھے ، جبکہ گیسٹ اسپیکر ایس پی موٹر وے ندیم اشرف وڑائچ تھے۔

وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر آصف علی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ٹریفک کے قواعد کی خلاف ورزی اور نامناسب حد تک جلد بازی کی وجہ سے حادثات میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔
کوئی بھی دن ایسا نہیں ہوتا کہ جب حادثہ نہ ہو، مزید کہا کہ ہمیں اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرتے ہوئے خود بھی ڈرائیونگ قوانین کے مطابق کرنی چاہیے اور دوسروں کا بھی خیال رکھنا چاہیے۔

یہ سیمنار اس چیز کی ایک کڑی ہے ان کی پاسداری کرتے ہوئے خود بھی حادثات سے بچنا ہے اور دوسروں کو بھی بچانا ہے۔

گیسٹ سپیکر ایس پی موٹروے پولیس ندیم اشرف وڑائچ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قانون میں تمام خلاف ورزیوں جو کہ ا نسانی رویے کی عکاسی کرتی ہیں، ان کے لیے سزائیں بھی مقرر ہیں۔

ٹریفک قوانین پر عمل کرنا لازمی ہے۔ سڑکوں پر انسانی جانوں کے ضیاع کی خوفناک شرح میں کمی کرنا سڑکوں کو استعمال کرنے والے تمام افراد کی ذمہ داری ہے۔

آج سے ہمیں اس بات کا عہد کرنا ہوگا کہ ٹریفک قوانین کی پاسداری اس تناظر میں کرنا ہے کہ ہماری جان سمیت پوری انسانیت کی جان کا خیال کرنا ہے خصوصا گاڑی چلاتے ہوئے جب یوٹرن لیا جائے ہمیشہ پیچھے سے آنے والوں کا خیال کیا جائے ۔
کیونکہ اگر پیچھے سے آنے والا تیز بھی آ رہا ہو تو یوٹرن والے کا قصور سمجھا جاتا ہے۔

لہذا ہر بندے کا فرض ہے کہ وہ خود بھی احتیاط کرے اور دوسروں کا بھی خیال رکھیں۔

اس موقع پر ڈی آئی جی چوہدری محمد سلیم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بڑھتی ہوئی ٹریفک پر قابو اس وقت پایا جا سکتا ہے، جب ہر بندہ اپنا اپنا احساس پیدا کر کے ٹریفک قوانین کو ملحوظ خاطر رکھے تاکہ روڈ پر آنے والے شہریوں کا خیال کیا جا سکے۔

مزید وائس چانسلر جامعہ کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے پلیٹ فارم مہیا کیا کہ تمام لوگوں اور طلبہ کو روڈ سیفٹی کے قوانین سے روشناس کروایا جاسکے۔

اس موقع پر ٹریثرارمحمد رفیق فاروقی، میجر صفدر حسین ڈاکٹر مطلوب ڈاکٹر مقرب علی ،ڈاکٹر عثمان جمشید، ڈاکٹر شمس مرتضی سمیت دیگر فیکلٹی اور طلباء و طالبات کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں