Breaking NewsEducationتازہ ترین

سیکرٹری سکولز کی بادشاہی ، 45لاکھ روپے ماہانہ بچوں کے رسالے پر خرچ کرنے احکامات جاری

سکولوں کو ترقیاتی کاموں کےلئے ہر کوارٹر میں این ایس بی، (نان سیلری بجٹ) دیا جاتا ہے تاکہ سکول کے اخراجات پورے ہوسکیں، اور چھوٹی موٹی مرمتیں روٹین کے مطابق جاری رہیں مگر اب یہ فنڈز جنوبی پنجاب کے سکولوں میں لگنے کے بجائے ایک رسالہ خریدنے میں لگنے لگا ہے جس کا نام روشنی ہے ، یہ رسالہ سیکرٹری سکولز نے نکالا ہے پہلے اس کو ویب سائٹ پر جاری کیاگیا جس میں تمام سکولوں سے آرٹیکل منگوائے جاتے تھے مگر اب اس کو کمائی کاذریعہ بنالیا گیا ہے ، اس کو کتابی شکل میں شائع کیا جاتا ہے اور ہرسکول کو حکم جاری کیاگیا ہے کہ وہ اس کو خریدیں ہر سکول کی لائبریری میں  کم سے کم تین رسالے رکھے جائیں گے۔
اگر سکول بڑا ہے تو ہر چار بچوں کےلئے ایک رسالہ خریدنے کے احکامات دئے گئے ، ہرماہ تقریبا 95 ہزار رسالے فروخت کئے جاتے ہیں اور ہرماہ اس پر 45لاکھ روپے لاگت آتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رسالے کے پیسے چار ماہ کے اکٹھے لے لئے جاتے ہیں تاہم ان کو ہدایت کی جاتی ہے کہ ہرماہ کی دس تاریخ سے پہلے اپنا پرنٹ آرڈر دوبارہ جاری کریں گے ، اب تک تقریبا ساڑھے چار کروڑ روپے اس رسالے کی خرید پر خرچ ہوچکا ہے۔

جب کہ ایک اور ذرائع کادعویٰ ہے کہ سیکرٹری سکولز اس رسالے میں 50فیصد کے حصہ دار ہیں اور پبلشر ان کا من پسند ہے، تاہم اس دعویٰ کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

لیکن ایڈیشنل سیکرٹری سکول جنوبی پنجاب عطاالحق کا کہنا ہے کہ رسالہ ضرور چھپ رہا ہے مگر اس میں کرپشن نہیں ہے، ای رسالہ تو جاری ہے لیکن شائع شدہ رسالے کے بارے میں ان معلوم نہیں ہے ۔

جبکہ ڈی پی آئی خواجہ مظہر الحق کا کہنا ہے کہ رسالہ خریدنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں سکولوں کے پاس جو فنڈز دستیاب ہوتے ہیں ان ہی میں سے ادائیگی کی جاسکتی ہے ، اس لئے نان سیلری بجٹ سے ہی ادائیگی ہوگی ۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں