Breaking NewsEducationتازہ ترین

207 ملین روپے سے ڈیپارٹمنٹ آف صوفی ازم کی تعمیر شروع

207 بہاوالدین زکریا یونیورسٹی میں نیا ڈیپارٹمنٹ صوفی ازم بنایا جارہا ہے، ہائر ایجوکیشن کمیشن نے 207 ملین روپے بجٹ کی منظوری دیدی۔

صوفی ازم میں جدید سائینسی وٹینالوجی کے ساتھ ایم فل اور پی ایچ ڈی کی ڈگریاں کرائیں گے ۔

اسلامیات ڈیپارٹمنٹ کو انسٹیٹوٹ بنانا چاہتے ہیں، ان خیالات کا اظہار بہاوالدین زکریا یونیورسٹی چیئرمین شعبہ علومہ اسلامیہ پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب نے انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ 132 ہجری میں موجودہ خطے میں اسلام کی ترویج وتبلیغ اولیاءاللہ و صوفیائے کرام نے شروع کرائی، اس وجہ سے یونیورسٹی کا نام بھی بہاوالدین ذکریا یونیورسٹی رکھا گیا

پبلک سوشل ڈویلپمنٹ نے صوفی ازم کا ڈیپارٹمنٹ بنایا جس پر کام 2021 میں دوبارہ شروع کردیا گیا،صوفی ازم ڈیپارٹمنٹ کا مقصد موجودہ خطے کے صوفیائے کرام کی اسلام کیلئے خدمات،انکے علمی کام پر ریسرچ و تحقیق ہے اور صوفی ازم ڈیپارٹمنٹ میں صوفی ازم میں ہی دور حاضر کی جدید سائنسی و ٹیکنالوجی کے ساتھ ایم فل اور پی ایچ ڈی بھی کرائی جائیگی۔

ریسرچ لائبریری قائم کی جائے گی، جس میں طلباء طالبات کو صوفیائے کرام کی لکھی ہوئی کتابوں کو پرکھنے پڑھنے ریسرچ کرنے میں آسانی ہوگی۔

نیا ڈیپارٹمنٹ بنانے کے لئے ہائر ایجوکیشن کمیشن نے 207 ملین روپے بجٹ کی منظوری دیدی ہے۔

ماہر اساتذہ کرام کی بھرتیاں کی جائیں گی اور صوفی ازم میں پی ایچ ڈی کرنے والے طالبعلموں کے لئے روزگار کے مواقع پیدا کئے جائیں گے۔

پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب نے مزید بتایا کہ اسلامیات ڈیپارٹمنٹ کو انسٹیٹوٹ بنا دیں گے ، انسٹیٹوٹ میں مختلف شعبہ جات،لاء،اسلامک تھاٹ،اسلامی فکر،قرآن وحدیث ودیگر اہم شعبہ جات ہونگے۔اب تک ہمارا ڈیپارث 6 کانفرنسز منعقد کرا چکا ہے ۔

22 نومبر 2022 کو ایک اور بین الاقوامی کانفرنس منعقد کرائی جارہی ہے ۔

انسٹیٹوٹ آف اسلامک سٹڈیز ادارہ علوم اسلامیہ کو روایتی انداز میں نہ لیا جائے اسکو جدیڈ تقاضوں کے مطابق اپنا کردار کرنا ہے

انہوں نے تصوف کو تزکیہ نفس انسان کے باطن کی اصلاح قرار دیا تصوف میں انسان کی روحانیت کی اصلاح و بہتری کی جاتی ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں