Breaking NewsNationalتازہ ترین

پنجاب پر پرویز الٰہی کی حکمرانی ، عدالت نے بڑا فیصلہ سنا دیا

وزیراعلیٰ پنجاب کے معاملے پر ڈپٹی سپیکر دوست مزاری کی رولنگ کےخلاف درخواستوں پر سپریم کورٹ میں سماعت مکمل، پنجاب پر کون حکمرانی کرے گا سپریم کورٹ نے حتمی فیصلہ سنا دیا۔

تفصیلات کےمطابق تخت پنجاب پر کون حکمرانی کرے گا ، اس حوالےسے سپریم کورٹ نے حتمی فیصلہ سنادیا۔

پرویزالہی کی درخوست منظور کرلی گئی، ڈپٹی سیپکر کی رولنگ کو سپریم کورٹ نے غلط قرار دے دیا، ڈپٹی سیپکر کی رولنگ غیر آئینی ہے،حمزہ شہباز نے جو حلف اٹھایا وہ بھی غیر آئینی ہے،جو کابینہ بنائی گئی وہ بھی غیر قانونی ہے،حمزہ شہباز وزیراعلیٰ پنجاب نہیں رہے، چودھری پرویز الہی نئے وزیراعلیٰ پنجاب بن گئے۔

سپریم کورٹ کی جانب سے احکامات جاری کئے گئے کہ چیف سیکریٹری پرویز الہٰی کابطور وزیراعلیٰ نوٹی فکیشن جاری کریں، گورنر آج ساڑھے 11بجے تک نئے وزیراعلیٰ سے حلف لیں،اگر گورنر حلف نہ لے تو صدر مملکت اس کا انتظام کریں، حمزہ شہباز نے جو بھی قانونی کام کئے وہ برقرار رہیں گے,حمزہ شہباز فوری طور پر وزیراعلیٰ آفس خالی کریں۔

تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا،اس آرڈر کی کاپی گورنر، ڈپٹی اسپیکر اور چیف سیکریٹری کو ارسال کریں۔

قبل ازیں سپریم کورٹ نے سماعت ایک بار پھر ملتوی کردی تھی جس پر احکامات صادر کئے کہ ڈپٹی سپیکر کی رولنگ کے خلاف فیصلہ ساڑھے 7 بجے سنایا جائے گا،کیس کی سماعت کے دوران دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ فل کورٹ بنانا کیس کو غیر ضروری التواء کا شکار کرنے کے مترادف ہے، اور فل کورٹ بنتا تو معاملہ ستمبرتک چلا جاتا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ہمیں ابھی تک نہیں بتایا گیا کس قانون کے تحت فل کورٹ بنچ بنائیں، صوبے کے چیف ایگزیکٹو کا معاملہ ہے فیصلے میں تاخیر نہیں کرسکتے، چیف جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا کہ ہمارے سامنے فل کورٹ بنانے کا کوئی قانونی جوازپیش نہیں کیا گیا، عدالت میں صرف پارٹی سربراہ کی ہدایات پرعمل کرنے سے متعلق دلائل دیے گئے۔

ہم نے یہ فیصلہ کیا کہ موجودہ کیس میں فل کورٹ بنانے کی ضرورت نہیں، اصل سوال تھا کہ ارکان کو ہدایات کون دے سکتا ہے، آئین پڑھنے سے واضح ہے کہ ہدایات پارلیمانی پارٹی نے دینی ہیں، فل کورٹ بنتا تو معاملہ ستمبرتک چلا جاتا کیونکہ عدالتی تعطیلات چل رہی ہیں ۔

چیف جسٹس کا مزید کہناتھا کہ گورننس اور بحران کے حل کے لئے جلدی کیس نمٹانا چاہتے ہیں، آرٹیکل63 اے کی تشریح میں کون ہدایت دے گا یہ سوال نہیں تھا، تشریح کے وقت سوال صرف انحراف کرنے والے کے نتیجے کا تھا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

پاکستان میں کرونا وائرس کی صورت حال

گھر پر رہیں|محفوظ رہیں